Home / ادارہ علوم القرآن ایک تعارف

ادارہ علوم القرآن ایک تعارف

قرآنی مجید خالق کائنات کی طرف سے انسانیت کے لیے آخری صحیفۂ ہدایت اور رہتی دنیا تک کے لیے رب العالمین کی مرضیات کا ترجمان ہے۔ قرآن کریم کی اس عظمت اور اللہ تعالیٰ کے اس عظیم احسان کی صحیح شکر گذاری کا تقاضا ہے کہ ہماری فکر ونظر کا محور ومرکز یہی کتاب الٰہی ہو اور عملی زندگی کے ہرگوشہ میں یہ نور مبین ہمارے لیے حقیقی مشعل راہ ہو۔ قرآنی حقائق ومعارف سے فیض یاب ہونے اور اس کے متعین کردہ خطوط پر انفرادی واجتماعی زندگی کی تعمیر کے لیے ناگزیر ہے کہ اس پر غور وفکر کا سلسلہ بغیر کسی انقطاع کے جاری رہے اور اس کی تعلیم وتشریح کا آوازہ برابر بلند ہوتا رہے۔ اللہ تعالیٰ کا شکر ہے کہ مسلمان کسی دور میں بھی اس احساس سے خالی نہیں رہے، لیکن کتاب اللہ کی عظمت اور اس کی اساسی حیثیت کا تقاضا ہے کہ نگاہیں ہروقت اس کی طرف متوجہ رہیں، مختلف انداز اور مختلف پہلوؤں سے اس سے ربط وتعلق کو ہمیشہ تازہ واستوار رکھا جائے اور قرآنی علوم ومعارف کی توسیع واشاعت کے لیے ہرممکن کوشش جاری رہے۔

اسی احساس کے پیش نظر اللہ تعالیٰ کی توفیق ومدد سے ۱۹۸۴میں ادارہ علوم القرآن کا قیام عمل میں آیا۔